پٹھوں کے کھچاؤ اور کمر میں دوبارہ درد نہیں ہو گا۔ کس طرح کا جوتا پہننے سے پاؤں کی ایڑھیوں کا درد ختم ہو سکتا ہے؟

عام طور پر کسی بھی شخص کی پنڈلی کے عضلات میں اکڑ پیدا ہو سکتی ہے تاہم اکثر و بیشتر اس کا شکار بڑی عمر کے افراد اور کھلاڑی ہوتے ہیں۔ عام طور پر یہ تکلیف زیادہ دیر آرام کرنے یا نہایت سخت جسمانی ورزش کے دوران پیدا ہو جاتی ہے۔ تاہم چند کیسز میں اس کی وجہ سنجیدہ نوعیت کی طبی کیفیت بھی ہو سکتی ہے۔ کمر کے نچلے حصے میں درد ہڈیوں کی کمزوری کی وجہ سے ہوتا ہے جس کی شکایت عموماً 20 سے 50 سال کی عمر کے افراد کو رہتی ہے۔ عام طور پر گردن اور کمر کے پٹھوں کی کمزوری کی وجہ سے بھی کمر کے نچلے حصے میں درد کی شکایت رہتی ہے۔الخلیج اخبار کے مطابق موٹاپا، ریڑھ کی ہڈی کی چوٹ یا بڑھاپے کی وجہ سے کمر کے نچلے حصے میں درد شروع ہو جاتا ہے۔

کمر کے نچلے حصے میں پٹھوں کو مضبوط اور لمبا کرنا کارٹلیج کو اس کی عام حالت میں واپس آنے کے قابل بناتا ہے اور اسے آپریشن کی ضرورت نہیں ہوتی۔ریڑھ کی ہڈی میں موجود ’کارٹلیج‘ اسے حرکت اور مڑنے میں مدد دیتے ہیں لیکن اگر یہ اپنی جگہ سے حل جائیں تو انسان شدید تکلیف اور درد کا شکار ہو جاتا ہے۔ کارٹلیج کے اپنی جگہ سے ہٹ جانے کے عمل کو ہرنیاٹڈ ڈسک کہا جاتا ہے۔ ہرنیاٹڈ ڈسک کی علامات صرف کمر کے درد سے ظاہر نہیں ہوتیں بلکہ اعضاء میں عدم توازن، یا اعضاء کے سن ہو جانے سے بھی ظاہر ہوتی ہیں۔ یہ درد یا گردن کی طرف سے شروع ہوتا اور یا پھر جسم کے نچلے حصے سے۔دبئی میں آرتھوپیڈک سرجن ڈاکٹر مثنی سرتاوی کے مطابق ہرنیاٹڈ ڈسک کی علامات 95 فیصد لوگوں میں بغیر کسی شدید درد کےظاہر ہوتی ہیں۔ ریڑھ کی ہڈی کا ریڈیو گراف نہ ہونے تک اس کا تعین کرنا مشکل ہوتا ہے۔

تاہم 5 فیصد افراد میں پیروں کے سن ہونے کے ساتھ ہی کمر میں شدید درد ہو سکتا ہے۔ڈاکٹر مثنی سرتاوی کا کہنا تھا کہ ہرنیاٹڈ ڈسک کے علاج کے لیے آپریشن واحد طریقہ نہیں ہے بلکہ موجودگی کا مطلب یہ نہیں ہے بلکہ فزیو تھراپی کے ذریعے اس مسئلے پر قابو پایا جا سکتا ہے۔ فزیوتھراپی سے پٹھوں کو مضبوط بنایا جاتا ہے اور کارٹلیج کو اپنی معمول کی پوزیشن میں واپس لانے کی کوشش کی جاتی ہے دوسرے کیس میں کارٹلیج آس پاس موجود ریشوں کی انگوٹھی میں پایا جاتا ہے۔ تیسرے کیس میں کارٹلیج کے گرد موجود ریشوں کی انگوٹھی کا ایک کٹ جگہ سے باہر نہیں آتا، اور اس کا علاج یا تو قدامت پسند علاج پر مبنی ہے یا ڈاکٹر کی صوابدید پر منحصر ہے۔ جبکہ ریشوں کی انگوٹھی اور کارٹلیج سے باہر نکلنا اور اعصاب پر دباؤ پھسلنے کی چوتھی حالت میں پایا جاتا ہے اس کا علاج سرجری یا لیپروسکوپک کارٹلیج کو ہٹانے اور دیگر مصنوعی امپلانٹ پر ہوتا ہے۔

Sharing is caring!

Categories

Leave a Reply

Your email address will not be published. Required fields are marked *