دوسری دفعہ قربت سے پہلے کا عمل حدیث سے ثابت ایک مجرب طریقہ

قرآن مجید رب عزوجل فرماتا ہے جب ان سے قربت کرے جو اللہ تعالیٰ نے تمہارے نصیب لکھا ہو ۔ حدیث پاک میں آیا ہے تم میں سے اپنے بیوی کیساتھ قربت کرنا بھی صدقہ ہے ۔ امام غزالی ؒ فرماتے ہیں جب کبھی قربت کریں نیت لذت لینے کی نہ ہو بلہ نیت یہ رکھو برے کام سے بچو گے اور اولاد نیک پیدا ہوگی ۔ اس نیت سے قربت کریں تو ثواب پائیں گے ۔قربت سے پہلے خوشبولگانا اچھی بات ہے ۔آپﷺ نے فرمای جو مرد اپنی بیوی کیساتھ اسکو بہلانے کیلئے اسکے ہاتھ پکڑتا ہے

اللہ تعالیٰ اس کیلئے ایک نیکی لکھ دیتا ہے جب قربت کیلئے عورت کے گلے میں ہاتھ ڈالتا ہے اس کے حق میں دس نیکیاں لکھ دی جاتی ہیں اور قربت کرتا ہے تو دنیا اور جو کچھ اس میں ان سب سے بہتر ہے ۔ اللہ تعالیٰ نے میاں بیوی کی صورت میں ایک انمول رشتہ پیدا فرمایا ہے جس کے تعلقات میں اللہ تعالیٰ نے بے پناہ لذت رکھی ہے یہ وہ رشتہ ہے جس کو تباہ کرنے کیلئے شیطان ہر وقت تیاری میں رہتا ہے اور طرح طرھ کے ہربے اختیار کرکے میاں بیوی کے درمیان ناچاکی کا سبب بنتا ہے ۔اگر آپ ایک ہی رات میں ایک سے زیادہ دفعہ قربت اختیار کرنا چاہتے ہیں ۔ تو حدیث کی رو سے ایک چھوٹا سا عمل بتایا جائیگا ۔

جس کو کرکے آپ اچھے طریقے سے بے پناہ لذت حاصل کرسکتے ہیں۔ میاں بیوی کا صحبت کرنا جہاں بے پناہ لذت کا باعث ہے وہی اس کیلئے ثواب کا بھی اعلان کیا گیا ہے چنانچہ نبی پاکﷺ نے ارشاد فرمایا اپنی بیوی سے قربت اختیار کرنا بھی صدقہ ہے اور اس پر ثواب ملتا ہے ۔ صحابہ کرام ؓ نے عرض کیا یا رسول اللہ ﷺ ایک شخص اپنی بیوی سے نفسانی خواہش پوری کرتا ہے اس پر بھی ثواب ہے ۔ اگر وہ اپنی خواہش کسی غلط جگہ پوری کرتا تو اس پر گ۔ناہ ہوتا یا نہیں صحابہ کرام ؓ نے عرض کیا ضرور جب گناہ سے بچنے کیلئے حلال جگہ اس کو صرف کیا تو ضرور ثواب ملے گا۔ حدیث مبارکہ سے جانتا ہیں

اگر ایک سے زیادہ مرتبہ قربت کا دل ہو تو درمیان سے ایسا کیا کرنا چاہیے ۔ آپﷺ نے فرمایا جب تم میں سے اپنی بیوی سےقربت کرلے پھر دوبارہ قربت کرنا چاہے تو وضو کرلے ایک دوسری روایت میں ہے وضو دوبارہ قربت کیلئے خوب چستی پیدا کردیتا ہے ۔ ایک دوسری روایت میں حضرت ابو رافع ؓ سے مروی ہے کہ ایک روز نبی کریم ﷺ اپنی تمام بیویوں کے پاس گئے اور ہر ایک کے پاس قربت کے بعد غسل کرتے رہے اے اللہ کے رسول آپ آخر میں ایک ہی غسل کرلیتے تو کیا کافی نہ تھا آپﷺ نے فرمایا یہ طریقہ یعنی ہر مرتبہ الگ غسل کرنا یعنی پاکیزگی صفائی اور تہارت کا باعث ہے یہ عمل کرکے زیادہ لذت زیادہ پاکیزگی زیادہ صفائی حاصل کرسکتے ہیں۔

Sharing is caring!

Categories

Comments are closed.