اللہ کے یہ 3 نام ہمیشہ کے لئے یاد کر لو،جب بھی رزق کی پریشانی آئے تو یہ پڑھ لیا کرو،معجزاتی عمل

رب العالمین ، صدر ، وائسرائے ، لسانی اتفاق رائے کے معاہدے کا حل اور اس کے بعد خداتعالیٰ کی صفات کا تذکرہ کیا جاتا ہے۔ ہم دیکھتے ہیں کہ جب حالات بہت کشیدہ تھے تو نبی اکرم صلی اللہ علیہ وسلم کن کن ناموں کا مطالبہ کرتے تھے ، یا حیا یعقوم رحمہ اللہ فرماتے تھے: میں رسول اللہ صلی اللہ علیہ وسلم کے ساتھ تھا۔ اللہ تعالی نے جب ایک شخص نے دعا کی اور کہا:

حیا یا قیوم عن اصیلک اے وجود سے آسمانوں کا خالق اے زندہ اے ابدی میں آپ سے پوچھتا ہوں ، یعنی میں آپ سے اس کی طلب کرتا ہوں جس کی مجھے ضرورت ہے۔ اس نے کہا: کیا تم جانتے ہو کہ اس نے اللہ کی قسم کھا کر میری جان کس کے ہاتھ میں لی ہے؟ دعا قبول کرتا ہے اگر آپ چاہتے ہیں کہ آپ کی دعائیں قبول ہو جائیں تو ان تینوں ناموں کو اپنا معمول بنائیں۔ جب بھی آپ چاہتے ہیں کہ آپ کی دعائیں قبول ہوں تو پہلے ان ناموں سے اللہ کو پکاریں اور پھر قیامت کے دن دعا مانگیں جب لوگ جنت میں جائیں گے۔ اگر وہ جاتے ہیں تو وہ جمعہ کے روز اللہ تعالی کی طرف سے اپنی کرسی پر اتریں گے۔ تب اللہ رب العزت نور کے اراکین کے ساتھ کرسی کا گھیراؤ کرے گا ، یعنی کرسی کے ارد گرد نور کے ممبر ہوں گے

اور نبی آئیں گے۔ یہاں تک کہ وہ روشنی کے ارکان پر اس پر بیٹھ جائیں گے ، تب تک اللہ ارکان کو کرسیاں گھیرے گا ، نیک اور شہید آئیں گے ، یہاں تک کہ وہ ان پر بیٹھ جائیں گے ، تب تک اللہ اپنی کرسی پر چڑھ جائے گا ، اور شہدا اور نیک لوگ اس کے ساتھ چڑھ جاؤ. قیامت کے دن جس طریقے سے اللہ سبحانہ وتعالی اپنے بندوں سے ملاقات کرے گا اس کا تذکرہ یہاں کیا گیا ہے اور یہ بات بہت بلند ہے کہ حقیقت یہ ہے کہ اللہ سے بڑھ کر کوئی اور نہیں ، تو آئیے ہم اللہ کے ناموں کی پیروی کرتے ہیں اللہ سبحانہ وتعالی جس کے ہاتھ میں میری جان ہے اس نے اللہ تعالی کو اسی نام سے پکارا ہے۔ جب اسے اس نام سے پکارا جاتا ہے ، تو وہ دعا قبول کرتا ہے۔ اگر آپ چاہتے ہیں کہ آپ کی دعائیں قبول ہو جائیں تو پھر ان تینوں ناموں کو اپنا معمول بنائیں۔ یا ہے قیوم براہمتک استغیث۔ اللہ ہمارا حامی و مددگار رہے۔ آمین سورس لنک

Sharing is caring!

Categories

Leave a Reply

Your email address will not be published.