امام احمد ابن حنبل ؒ کی اپنے بیٹے کو

امام احمد ابن حنبل ؒ نے اپنے صاحب زادے کو شادی کی رات ۱۰ نصیحتیں فرمائیں۔‘ہر شادی شدہ مرد کو چاہیے کہ انکو غور سے پڑھے۔ اور اپنی زندگی میں عملی طور پر اختیار کرے۔امام احمد بن حنبل ؒ نے فرمایا‘میرے بیٹے، تم گھر کا سکون حاصل نہیں کرسکتے۔ جب تک کہ اپنی بیوی کے معاملے میں ان دس عادتوں کو نہ اپناؤ لہٰذا ان کو غور سے سنو اور عمل کا ارادہ کرو۔ ‘پہلی دو تو یہ کہ عورتیں تمہاری توجہ چاہتی ہیں۔ اور چاہتی ہیں کہ تم ان سے واضح الفاظ میں محبت کا اظہار کرتے رہو۔ لہٰذا وقتاً فوقتاً اپنی بیوی فوقتاً اپنی بیوی کو اپنی محبت کا احساس دلاتے رہو۔ اور واضح الفاظ میں اسکو بتاؤ کہ وہ تمہارے لئے کس قدر اہم اور محبوب ہے۔(اس گمان میں نہ رہو کہ وہ خود سمجھ جائے گی‘۔

رشتوں کو اظہار کی ضرورت ہمیشہ رہتی ہے۔
)یاد رکھو اگر تم نے اس اظہار میں کنجوسی سے کام لیا تو تم دونوں کے درمیان ایک تلخ دراڑ آجائے گی۔ جو وقت کے ساتھ بڑھتی رہے گی۔ اور محبت کو ختم کردے گی۔تین‘ عورتوں کو سخت مزاج اور ضرورت سے زیادہ محتاط مردوں سے کوفت ہوتی ہے۔ لیکن وہ نرم مزاج مرد کی نرمی کا بیجا فائدہ اٹھانا بھی جانتی ہیں۔ لہٰذا ان دونوں صفات میں اعتدال سے کام لینا تاکہ گھر میں توازن قائم رہے۔

اور تم دونوں کو ذہنی سکون حاصل ہو۔ ‘چار عورتیں اپنے شوہر سے وہی توقع رکھتی ہیں۔ جو شوہر اپنی بیوی سے رکھتا ہے۔ یعنی عزت، محبت بھری باتیں، ظاہری جمال، صاف ستھرا لباس اور خوشبودار جسم لہٰذا ہمیشہ اسکا خیال رکھنا‘پانچ‘ یاد رکھو گھر کی چار دیواری عورت کی سلطنت ہے۔ جب وہ وہاں ہوتی ہے ۔تو گویا اپنی مملکت کے تخت پر بیٹھی ہوتی ہے۔‘اسکی اس سلطنت میں بیجا مداخلت ہرگز نہ کرنا اور اسکا تخت چھیننے کی کوشش نہ کرنا‘جس حد تک ممکن ہو گھر کے معاملات اسکے سپرد کرنا اور اس میںتصرف کی اسکو آزادی دینا‘۔چھ‘ ہر بیوی اپنے شوہر سے محبت کرنا چاہتی ہے۔

لیکن یاد رکھو اسکے اپنے ماں باپ بہن بھائی اور دیگر گھر والے بھی ہیں۔ جن سے وہ لاتعلق نہیں ہو سکتی اور نہ ہی اس سے ایسی توقع جائز ہے۔ لہٰذا کبھی بھی اپنے اور اسکے گھر والوں کے درمیان مقابلے کی صورت پیدا نہ ہونے دینا کیونکہ اگر اس نے مجبوراً۔

Sharing is caring!

Categories

Leave a Reply

Your email address will not be published. Required fields are marked *