مرد ظ۔الم ہوتا ہے مرد حاکم ہوتا ہے مرد خود کو عورت کا خداسمجھتا ہے

مرد کی محبت دانت کے درد کی طرح ہوتی ہے جب وہ کرتا ہے ایسی شدت سے کرتا ہے اور جب وہ خاموش ہوتا تو ایسا لگتا ہے کہ اس نے کبھی محبت نہیں کی ۔ میں نے مرد کا تحفظ تب دیکھا جب سڑک کراس کرتے وقت اس نے اپنے ساتھ چلنے والی فیملی کو اپنے پیچھے کرتے ہوئے خود کو ٹریفک کے سامنے رکھا

اگر بچوں کو غلطی کیوجہ سے ڈانٹے تو وحشی اگر بیوی کو نوکری سے روکے تو متکبر اور رعب جمانے والا اگر ماں سے دلجوئی کرے تو ماں کا لاڈلا اور اگر بیوی سے پیاری باتیں کرے تو بیوی کا مرید۔لیکن بڑا سخت جان ہوتا ہے یہ مرد آنسوؤں کو ایسے پی جاتا ہے جیسے اسے تکلیف ہوتی ہی نہ ہو مگر مرد جب روتا تو فرش تاعرش سب روتا ہے ۔میں نے مرد کو بیوی بچوں کی روٹی کی خاطر دوسروں سے خاموشی کیساتھ گالیاں سنتے بھی دیکھا ہے ۔مرد بہت حسین ذات ہے کبھی باپ کے روپ میں ہماری حفاظت کرتا ہے کبھی بھائی کی صور ت میں ہمارا محافظ بن جاتا ہے ۔کبھی شوہر کی صورت میں تمام عمر ہماری ضروریات پوری کرنے کیلئے خ و ن پسینہ بہا تا رہتا ہے کیونکہ مرد بھی محبت کرتا ہے اور آخر تک نبھاتا ہے ۔ مرد اگر بیٹا ہے تو نعمت بھائی ہے تو ہمت شوہر ہے تو تمہارے ایمان کی تکمیل باپ ہے

تو جنت کا دروازہ ان سب رشتوں میں وہ تمہارا محافظ ہے ۔ مر د سے اَنا کا مقابلہ کرنے والی عورت بے وقوف ہوتی ہے وہ اسے اپنا دشمن بنالیتی ہے اکھڑ پن اور ضد کرکے مرد سے بات منوائی جاسکتی ہے اس کے دل میں اپنی عزت اور محبت نہیں بڑھائی جاسکتی ۔قیامت کے دن عورت سے سب سے پہلے اس کی نماز اور پھر اس کو شوہر کے متعلق سوال ہوگا۔جو مرد آپ کیلئے روپڑے بس وہ محبت کی انتہاء ہے اس سے زیادہ آپکو کوئی بھی نہیں چاہ سکتا ۔مرد ظ۔لم ہوتا ہے مرد حاکم ہوتا ہے مرد خود کو عورت کا خدا سمجھتا ہے

ایسے کتنے ہی جملے ہم کتنی آسانی سے کہہ دیتے ہیں مگر کبھی سوچا ہے کہ مرد کس قدر مشقت کرتا ہے اپنی عورت کا سائبان بننے کیلئے اسے معاشرے کی سرد گرم سے بچا کر رکھتا ہے اپنا آپ مارتا ہے کماتا ہے اور پیسے سے اپنے گھر کی عورت کیلئے دنیا کی ہر سہولت خریدتا ہے پرشاید پھر بھی وہ قدرت پا نہیں سکتا جس کا وہ حقدار ہوتا ہے۔خوبصورت مرد وہی ہوتا ہے جو عورت کی عزت کرنا جانتا ہے اس سے محبت کرنا جانتا ہے اس کی اہمیت سے واقف ہوتا ہے ہر رشتے کا تقدس بحال رکھتا ہے چہروں سے اور قد کاٹھ سے مرد خوبصورت نہیں بن جاتے ۔محبت کی راہوں پر بچھڑنے والی اگر عورت ہو تو نئے راستوں سے مانوس ہوتے اسے دیر نہیں لگتی لیکن مرد جہاں بچھ۔ڑتا ہے وہیں بکھر جاتا ہے ۔

Sharing is caring!

Categories

Leave a Reply

Your email address will not be published. Required fields are marked *