”صرف پانچ منٹ میں دانت کا درد ختم۔“

دانت کا درد کبھی بھی آپ کو اپنا شکار بناسکتا ہے اور اکثر ایسی صورت میں ڈاکٹر کے پاس جانا مشکل ثابت ہوتا ہے تاہم کچھ گھریلو نسخے آپ کو اس سے ایک منٹ کے اندر ہی کچھ دیر کے لیے نجات دلانے کے لیے ضرور مددگار ثابت ہوسکتے ہیں جس کے بعد آپ آرام سے ڈاکٹر سے رجوع کرکے دیرپا علاج کروا سکتے ہیںایک ٹی بیگ لیں اور اسے گلاس میں کچھ مقدار پانی میں ڈبو دیں، اس کے بعد ٹی بیگ کو متاثرہ دانت پر رکھ دیں، اگر دانتوں کو ٹھنڈک سے حساسیت نہیں تو ٹی بیگ کو ٹھنڈے پانی میں ڈبوئیں، دن میں ایک یا 2 بار ضرورت پڑنے پر اسے آزمائیں۔ چائے میں موجود اجزا سوجن کم کرتے ہیں

جبکہ درد کو کم کرتے ہیں۔بیکنگ سوڈا ورم کش خصوصیات رکھتا ہے۔جو کہ سوجن کم کرتا ہے جبکہ جراثیم کش ہونے کی وجہ سے یہ دانت کے انفیکشن کا علاج بھی کرتا ہے، اسے استعمال کرنے کے لیے پانی میں روئی ڈبو کر نکالیں اور اسے بیکنگ سوڈا سے کور کردیں، اس روئی کو متاثرہ دانت پر رکھنا درد میں کمی لاسکتا ہے۔ اسی طرح ایک چائے کا چمچ بیکنگ سوڈا کچھ مقدار میں گرم پانی میں ڈال کر مکس کریں اور اس سیال سے کلیاں کرنا بھی یہی فائدہ پہنچاتا ہے۔

زیتون کے تیل میں روئی کو بھگو دیں اور متاثرہ حصے میں رکھ دیں، اس عمل کو دن میں دو سے تین بار دہرائیں۔ زیتون کا تیل ورم کش خصوصیات رکھتا ہے جو کہ دانتوں کے درد اور ورم کو کم کرکے ریلیف پہنچاتا ہے۔ایک چائے کا چمچ دار چینی پاﺅڈر اور 5 چائے کے چمچ شہد کو مکس کریں، اس پیسٹ کو متاثرہ حصے پر لگائیں جو درد میں کمی لائے گا، یہ عمل دن میں دو سے تین بار یا اس وقت تک دہرائیں جب تک درد ختم نہ ہوجائے۔ایک چائے کے چمچ پودینے کے خشک پتے ایک کپ ابلتے ہوئے پانی میں 20 منٹ کے لیے ڈبو دیں، اس کے بعد چھان لیں اور چائے ٹھنڈی ہونے پر اس سے کلیاں کریں۔

یہ چائے متاثرہ حصے کو سن کردے گی جبکہ ورم سے بھی ریلیف ملے گا۔کھارا پانی قدرتی طور پر دردکش ہوتا ہے اور یہ دانت کے درد کا آسان اور موثر نسخہ ثابت ہوسکتا ہے۔ اس کے لیے آدھا چائے کا چمچ نمک ایک گلاس گرم پانی میں ملائیں اور ماﺅتھ واش کے طور پر استعمال کریں۔ یہ نسخہ متاثرہ دانت کے ارگرد کی سوجن کی روک تھام بھی کرتا ہے۔دانتوں کے مسائل سے نجات دلانے میں مددگار غذائیں لونگ کو صدیوں سے دانتوں کے درد کے علاج کے لیے استعمال کیا جارہا ہے

جس کی وجہ یہ قدرتی طور پر جراثیم کش مصالحہ ہے، لونگ کے سفوف کی معمولی مقدار کا متاثرہ دانت پر استعمال یا لونگ کو ہی چبانا اس حوالے سے فائدہ مند ثابت ہوتا ہے۔ اس کے علاوہ لونگ کا تیل (2 قطرے) متاثرہ حصے پر لگانے سے بھی ایک منٹ میں آرام آسکتا ہے اگر ہم ان نسخوں پر عمل کر تے ہیں تو ہم دانتوں کے درد سے چھٹکارا حاصل کر سکتے ہیں۔

Sharing is caring!

Categories

Comments are closed.