چلتے پھرتے اللہ کا یہ نام پڑھ لیں

آج آپ کو اللہ تعالیٰ کے نام ” المجید ” کے بارے میں بتائیں گے ۔ وہ بہن بھائی جن کو گرمی برداشت نہیں ہوتی۔ یا گرمی کے اندر آنا جانا ہوتا ہے۔ کیونکہ گھر سے باہر نکلیں گے۔ تو گرمی ہے۔گرمی کا موسم ہے۔ اور اس گرمی کے اندر اور عام طور سردی کا موسم ہی کیوں نہ ہو۔ تو پیاس کی شدت بہت زیادہ ہوتی ہے۔ یعنی پانی پی پی کر پیاس ختم نہیں ہوتی۔ پیٹ تو بھر جاتا ہے ۔ لیکن پیاس نہیں بجھتی۔ بعض دفعہ ایسا ہوتا ہے جب انسان تین چار گلاس پئے گا۔ تو پھر جاکر پیاس بجھے گی۔ اور پیٹ بھر جاتا ہے۔ آپ چاہتے ہیں کہ آپ پانی پئیں۔ لیکن پیاس اتنی شدت سے نہ ہو۔ جس کو برداشت کرنا ممکن نہ ہو۔ ایسے حالات میں اللہ تعالیٰ کا اسم ” یا مجید ” ہے۔ آپ نے اس کو پڑھنا ہے۔ جب آپ گھر سے باہر نکلیں۔ اور دھوپ ہو۔ دھوپ کے اندر جارہے ہوں۔ اس وقت اللہ تعالیٰ کے اس نام ” یا مجید ” کاورد کرتے رہیں۔

جب تک آپ اپنی منز ل مقصود تک نہیں پہنچتے توتب تک آپ اس کا ورد کریں۔ اور اگر آپ دو آدمی ہیں۔ تین لوگ ہیں۔ چار لوگ ہیں۔ یعنی کچھ لوگ مل کر سفر کررہے ہیں۔ کہ بات کرنا کوئی مضحکہ نہیں ہے۔ بعض آپ کی باری ہو تو آپ بات کرسکتے ہیں۔ جب آپ فری ہوں۔ نہ کہ بات ہورہی ہو۔ نہ آپ بات کررہے ہوں۔ تو اس وقت بھی آپ اس کو پڑھ سکتے ہیں۔ مطلب یہ ہے کہ اس کےپڑھنے کی مقدار اور اس کے پڑھنے کے وقت میں کوئی خاص وقت نہیں ہے۔ یا پڑھنے کاو قت بھی خاص ہو۔ جتنا ہوسکے آپ اس کا ورد کریں۔ آپ اس کو پڑھیں۔ انشاءاللہ! اس کے پڑھنے سے آپ کی پیاس کی جو شدت ہے۔ وہ ختم ہوجائےگی۔ آپ نارمل روٹین میں آجائیں گے۔ جس طرح دو لوگ پانی پیتے ہیں۔ کہ ایک گلاس ، دو گلاس اور پھرآدھے گھنٹے کے بعد اور پھرگھنٹہ کے بعد ایک گلاس پی لیا۔ تو اس سے روٹین میں آپ کی طبیعت آجائے گی۔

Sharing is caring!

Categories

Leave a Reply

Your email address will not be published. Required fields are marked *