شوہر کی محبت واپس حاصل کرنے کا آسان وظیفہ

آج کا یہ عمل ایسی بہنوں کے لیے ہے جو شادی کے بعد بہت سے مسئلے مسائل سے دو چار ہیں اب جیسا کہ ان مسئلوں میں سب سے اہم مسئلہ یہ بھی ہے کہ شوہر کا بیوی کے ساتھ ایک بہت ہی برا رویہ بہت ہی روکھا روکھا سا رویہ ۔ جس سے عورت بہت ہی پریشان ہو جاتی ہے اب ظاہر ہی سی بات ہے اور ہر کوئی اس بات سے بہت ہی اچھے سے واقف ہے کہ خصوصاً اس بات سے عورت بہت ہی اچھے سے واقف ہے کہ عورت کو شادی کے بعد مرد کے پیار کی بہت ہی زیادہ ضرورت ہو تی ہے عورت چاہتی ہے کہ اس کو مرد کی محبت ملے اور بے شمار محبت ملے آج کا عمل آج کا وظیفہ کچھ ایسی عورتوں کے لیے ہے جو اپنی زندگی میں شادی کے بعد پریشان ہیں اور اپنے خاوند کی وجہ سے پریشان ہیں کہ ان کے خاوند کا رویہ ان کے ساتھ کچھ ٹھیک نہیں ہے۔

ظا ہر ہی سی بات ہے ہم سب بھی اس بات کو جانتے ہیں کہ شادی کے بعد عورت کے لیے لڑکی کے لیے بہت سے مسئلے مسائل درپیش ہو جاتے ہیں مگر عورت کے مرد کا اگر سلوک عورت کے ساتھ اچھا ہے تو اس کے لیے ان معاملات کو سنبھا لنا کافی آسان ہو جا تا ہے۔ تو آج کا وظیفہ انہی بہنوں کے لیے ہی ہے جو اپنے شوہروں کےان افعال سے بہت ہی زیادہ پریشان ہیں اور افسردہ ہیں اور ان کےذہنو ں میں طاق جیسے نا پاک ارادے بھی جن لے رہے ہیں ظاہر ہی سی بات ہے کہ جب گزارا نہیں ہو گا تو عورت طلاق ہی لے گی تو ان عورتوں کے لیے ایک مشورہ ہے میرا کہ جو طاق لینا چاہتی ہیں کہ وہ طلاق لینے سے پہلے اس وظیفہ کو کر لیں اس عمل کو کر لیں۔

انشاء اللہ بہت ہی زیادہ افاقہ ہو گا۔ خاص طور پر ایسی خواتین جو اپنے شوہر کے حوالےسے اپنےآپسی تعلقات کو لے کر بہت ہی زیادہ پریشان ہیں۔ وہ چاہتی ہیں کہ ہمارے آپس کے معاملات درست ہو جائیں ۔ ٹھیک ہو جا ئیں۔ کوئی بھی مسئلے مسائل ہیں انشاء اللہ اس وظیفے سے آپ کو بہت ہی زیادہ فائدہ ہونے والا ہے۔ تو یہ وظیفہ کرنے کا طریقہ کار ذرا ملاحظہ فر ما لیجئے۔ کہ جب آپ کے شو ہر رات کو گہری نیند سو جائیں تو ان کے سہرانے کھڑے ہو کر یا بیٹھ کر سورۃ لہب ایک بار پڑ ھ لیں اور اس کے بعد اپنے مقصد میں کا میابی کے لیے دعا کر یں انشاء اللہ اس عمل کےکرنے سے آپ کے ازدواجی زندگی کو لے کر جتنے بھی مسئلے مسائل ہیں وہ حل ہو جائیں گے اور آپ ایک خوشگوار زندگی بسر کریں گے۔ انشاء اللہ۔ ہر عورت اپنے شوہر کے ساتھ ہنسی خوشی زندگی بسر کر ے گی اس عمل کو کرنے کے بعد۔

Sharing is caring!

Categories

Leave a Reply

Your email address will not be published. Required fields are marked *