یہ چیز ناشتے میں کھائیں اور کمال دیکھیں پھر قوت اور طاقت کا طوفان

اُ ف کیا کھا کر میرے پاس آئے ہو ؟ ‘‘ ناشتے سے زرا دیر پہلے 3ٹکڑے یہ عام سی چیز کھائیں اور پھر کمال دیکھیں ۔ بوڑھاپا، پاس بھی نہیں پھٹکے گا ماہرین کا کہنا ہے کہ ہر چیز کے کھانے کا ایک مقررہ وقت ہے۔ اگر اس مناسب وقت پر اس شے کو کھایا جائے تو نہ صرف یہ آسانی سے ہضم ہوجاتی ہیں بلکہ یہ جسم کو فائدہ بھی پہنچاتی ہے۔ وہ کونسی ایسی چیز ہے جس کو کھانے سے بوڑھے بھی جوان ہورہے ہیں؟

چاکلیٹ کے کچھ ٹکڑے ناشتہ کے وقت کھانا جسم میں اینٹی آکسیڈنٹس کی مقدار میں اضافہ کرتے ہیں جو بڑھاپے کے عمل کو سست کرتے ہیں۔ چاکلیٹ امراض قلب کے لیے بھی مفید ہے۔ لیکن اس کی زیادہ مقدار سے جسم میں چربی ذخیرہ ہونا شروع ہوجائے گی جو موٹاپے، ہائی بلڈ پریشر سمیت کئی بیماریوں کا سبب بنے گی۔دودھ جسم اور دماغ کے خلیات کو پرسکون کر کے اچھی نیند لانے میں معاون ثابت ہوتا ہے لہٰذا نیم گرم دودھ کا ایک گلاس رات سونے سےپہلے پینا نہایت مفید ہے۔ اس کے برعکس دن میں دودھ پینا نظام ہاضمہ پر بوجھ بن سکتا ہے اور آپ کے دن بھر کے کھانے کا معمول خراب ہوسکتا ہے۔

براؤن چاکلیٹ جسم کو کئی بیماریوں سے محفوظ رکھتی ہے، یہ انسانی جسم کی قوت مدافعت پیدا کرنے والے عناصر کو مضبوط کرتی ہے۔ چاکلیٹ میں پایاجانے والاکوکا، پوٹاشیم، آئرن، زنک اور میگنیشیم دماغی صحت کو بہتر کرنے میں مدد فراہم کرتا ہے۔براؤن چاکلیٹ کی سب سے اہم اور صحت کے لیے مفید خوبی یہ ہے کہ یہ نقصان پہنچانے والے کولیسٹرول کو کم کرنے کے ساتھ مفید کولیسٹرول کو بڑھاتی ہے۔ ریسرچ کے مطابق تھوڑی سے ورزش اور اچھی غذا کے ساتھ براؤن چاکلیٹ کھانے سے جسم کے لئے نقصان دہ کولیسٹرول کم ہوتا ہے اور صحت مند کولیسٹرول بڑھتا ہے۔

براؤن چاکلیٹ کی دوسری اہم خوبی یہ ہے کہ اس سے بلڈ پریشر کو نارمل رکھنے میں مدد ملتی ہے، جسم میں موجود ’ پولی فینول ‘ کو بڑھاتا ہے، جو خون میں موجود آکسیجن کی روانی کوبڑھا دیتا ہے۔ چاکلیٹ کھانے سے ذہنی سکون حاصل ہوتا ہے کیونکہ براون چاکلیٹ دماغ میں ’ سیروٹونین ‘ پیدا کرتا ہے، جس سے انسان کے اندر تازگی کا احساس پیدا ہوتا ہے اور انسان ذہنی دباؤسے آزاد ہوجاتا ہے۔ ماہرین کا مزید کہنا ہے کہ براؤن چاکلیٹ دل کی بیماریوں سے بچنے میں بھی اہم کردار ادا کرتی ہے، اسے کھانے سے دل میں دوران خون بڑھ جاتا ہے اورشریانوں کو سخت ہونے نہیں دیتا۔

Sharing is caring!

Categories

Leave a Reply

Your email address will not be published. Required fields are marked *