”صبح نہار منہ اس کام سے وزن بڑھتا ہے جانئے رپورٹ میں“

موٹاپے کی اہم وجہ چکنائی کے حامل غذاؤں کا زیادہ استعمال ہوتا ہے لیکن کچھ ایسے کام بھی ہوتے ہیں جس کی وجہ سے موٹاپا ہو سکتا ہے جن میں سے کچھ ایسے کام ہے جو کہ ہم زور مرہ کرتے ہیں ، جسے نہار منہ ٹھنڈا پانی پینا ڈاکٹروں کے مطابق نہار منہ ٹھنڈا پانی نہ پیا کریں بلکہ اس کی جگہ نیم گرم پانی کا استعمال کریں مثال کے طور پر اگر آپ صبح کے وقت نیم گرم پانی کا ایک گلاس نہیں پی رہے تو سمجھیں کہ آپ موٹاپے کے خطرے سے دوچار ہیں۔ صبح کے وقت نیم گرم پانی کا ایک گلاس پینا ہمارے نظام انہظام کو بہتر بناتا ہے اور جسم میں توازن بحال کرتا ہے۔ صبح بیدار ہوتے ہی کھڑکیوں کے پردے پیچھے ہٹادیں تاکہ زیادہ سے زیادہ قدرتی روشنی آپ کے کمرے میں آئے اور آپ ذہنی جو جسمانی لحاظ سے چوکس ہو جائیں

۔ صبح کا آغاز ’سٹریچنگ ورزش‘ سے کریں۔ اس ورزش میں آپ اپنے مختلف اعضاءکو ہلکی پھلکی حرکت دے کر باقاعدہ ورزش کے لئے تیار کرتے ہیں۔ اپنی خوراک میں کاربو ہائیڈریٹ کے حصول کے مثبت ذرائع اپنائیں، یعنی ایسی خوراک کا استعمال کریں جس میں پائے جانے والے کاربوہائیڈریٹ موٹاپے کو بڑھاوا نہ دیں۔ مثال کے طورپر دلیہ، جئی، سیب، آم، دہی، کیلے وغیرہ زیادہ استعمال کریں۔اگر آپ موٹاپے میں کمی کرنا چاہتے ہیں تو چست یا بھاری بھرکم لباس کی بجائے ہلکا پھلکا یا ڈھیلا ڈھالا لباس پہنیں۔ یہ لباس آپ کو چہل قدمی اور جسمانی طور پر متحرک رہنے میں مدد فراہم کرے گا۔

دن کے آغاز میں الیکٹرانک آلات اور خصوصاً لیپ ٹاپ اور موبائل فون کا استعمال کم از کم رکھیں اور کوشش کریں کہ اپنے وزن اور صحت کے متعلق روزانہ کی بنیا دپر معلومات ضرور حاصل کرتے رہیں۔ایسے ہی سمجھا جاتا ہےکہ کھانا کم کرنے سے وزن کم ہو سکتا ہے لیکن ڈاکٹر کہتے ہیں کہ اگر اپ ناشتہ نہیں کرتے تو موٹاپا بڑی آسانی سے لگ سکتا ہے کیونکہ اس سے نظام انہضام میں خرابی پیدا ہوتی ہے جس سے موٹاپا ہو جاتا ہے اور یہ موٹاپا ذیابیطس اور دوسرے بیماریوں کی وجہ بن جاتی ہے

Sharing is caring!

Categories

Comments are closed.